Aankhein Ro Ro Ke Sujane Wale Lyrics Urdu/English

Aankhein Ro Ro Ke Sujane Wale Lyrics

Aankhein Ro Ro Ke Sujane Wale Lyrics

By Ala Hazrat Imam Ahmed Raza Khan

آنکھیں رو رو کے سُجانے والے

جانے والے نہیں آنے والے


کوئی دن میں یہ سرا اوجڑ ہے

ارے او چھاؤنی چھانے والے


ذبح ہوتے ہیں وطن سے بچھڑے

دیس کیوں گاتے ہیں گانے والے


ارے بد فَال بُری ہوتی ہے

دیس کا جنگلا سُنانے والے


سُن لیں اَعدا میں بگڑنے کا نہیں 

وہ سلامت ہیں بنانے والے


آنکھیں کچھ کہتی ہیں تجھ سے پیغام

او درِ یار کے جانے والے


پھر نہ کروٹ لی مدینہ کی طرف

ارے چل جُھوٹے بہانے والے


نفس میں خاک ہوا تو نہ مِٹا

ہے مِری جان کے کھانے والے


جیتے کیا دیکھ کے ہیں اے حورو!

طیبہ سے خُلد میں آنے والے


نِیم جلوے میں دو عَالم گلزار

واہ وا رنگ جمانے والے


حُسن تیرا سا نہ دیکھا نہ سُنا

کہتے ہیں اگلے زمانے والے


وہی دُھوم ان کی ہے ما شآء اللہ

مِٹ گئے آپ مِٹانے والے


لبِ سیراب کا صَدقہ پانی

اے لگی دل کی بُجھانے والے


ساتھ لے لو مجھے میں مجرم ہوں 

راہ میں پڑتے ہیں تھانے والے


ہو گیا دَھک سے کلیجَا میرا

ہائے رُخصت کی سُنانے والے


خلق تو کیا کہ ہیں خالق کو عزیز

کچھ عجب بھاتے ہیں بھانے والے


کشتۂ دشت حرم جنّت کی

کھڑکیاں اپنے سِرہانے والے


کیوں رضاؔ آج گلی سُونی ہے

اُٹھ مِرے دُھوم مچانے والے

Aankhein ro ro key sujaane waale
Jaane waale nahin aane waale


Koi din mein ye sara awjarh hay
Arey o chhaaoni chhaane waale


Zabah hote hain watan sey bichre
Des kyun gaatey hain gaane waale


Arey bad faal buri hoti hay
Des ka jangla sunaane waale


Sunlein aa’da mein bigarne ka nahin
Woh salaamat hain banaane waale


Aankhein kuch kehti hain tujh sey
paighaam
Aye dar e yaar key jaane waale

Phir na karwat li Madine ki taraf
Arey chal jhoote bahaane waale

Nafs mein khaak huwa tu na mita
Hay meri jaan key khaane waale

Jeetey kya dekh key hain aay hurow
Taybah sey khuld mein aane waale

Neem jalwe mein do ‘aalam gulzar
Waah waa rang jamaane waale

Husn tera saa na dekha na sunaa
Kehte hain agle zamaane waale


Wahi dhoom unki hay maa shaa Allah
Mit gaye Aap mitane wale


Lab e sairaab ka sadqa paani
Aaye lagi dil ki bujhaane waale


Saath le lo mujhe mein mujhrim hun
Raah mein parrte hain thane waale


Ho gaya dhak sey kaleja mera
Haaye rukhsat ki sunaane waale


Khalq to kya keh hain khaaliq ko ‘azeez
Kuch ‘ajab bhaate hain bhaane waale


Kushta e dasht e Haram Jannat ki
Khirkiyaan apne sirhaane waale


Kyun Raza aaj gali sooni hay
Uth mere dhoom machaane waale

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *